مظفر آباد: مسلم لیگ ن نے آج مظفر آباد میں سیاسی قوت کا مظاہرہ کیا ۔ تفصیلات کے مطابق سابق وزیراعظم نواز شریف نے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم آزاد کشمیر راجہ فاروق کو مخاطب کیا اور کہا کہ میں پاکستان سے فارغ ہو گیا ہوں۔ راجہ فاروق صاحب آزاد کشمیر میں ڈیوٹی لگا دیں۔ پاکستان سے نا اہل ہو گیا ہوں ،آزاد کشمیر کے لیے تو نا اہل نہیں ہوا؟ مجھے پہاڑ بہت اچھے لگتے ہیں، یہاں ڈیوٹی لگ گئی تو لوگوں کی بہت خدمت کریں گے اور آزاد کشمیر کے چپے چپے پر جائیں گے۔
مزید برآں انہوں نے مظفرآباد میں خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج میں ان تمام مجاہدین ،بچوں ،بیٹوں بیٹیوں دوستوں کوکہناچاہتاہوں کہ تم اکیلے نہیں ہو۔یہ پوری قوم آپ کے ساتھ ہے۔آج بھی ساتھ کل بھی ساتھ ہوگی۔ہم آپ کوکبھی نہیں چھوڑیں گے۔ہماری دعائیں آپ کے ساتھ ہیں۔ہم سب کشمیروالوں کے ساتھ ہیں۔آپ کادردہمارادرد ہے۔جس طرح آپ ظلم برداشت اور بہادری سے آزادی کی جنگ لڑرہے ہیں ہم سلام کرتے ہیں۔
ہمارے دل دھڑکنیں آپ کے ساتھ ہیں۔وہاں پیلٹ گن سے فائراور گولیاں جسموں میں جاتی ہیں۔آنکھوں سے لوگ اندھے ہوگئے ہیں۔آپ کومعلوم ہے جب وہ شہیدہوتے ہیں توپاکستانی پرچم میں لپیٹ کرانہیں دفن کیاجاتاہے۔انہوں نے کہاکہ کشمیری بہادری اور جرات کی نئی تاریخ رقم کررہے ہیں۔انشاء اللہ آپ کاکوئی بال بھی بیکا نہیں کرسکتا۔ آزادی کی تحریک کامیابی سے ہمکنارہوکررہے گی۔
ہم دعاگوہیں کہ آپ کی تحریک آزادی کی تحریک کامیاب ہو۔پاکستانی قوم آپ کی جرات کوسلام کرتی ہے۔نوازشریف نے کہاکہ ہم اقوام متحدہ سمیت دنیاکے ہرفورم پرآپ کامسئلہ اٹھاتے رہیں گے۔نوازشریف نے ہرفورم پرکشمیرکی آزادی کی بات۔یہ میرے لیے فخرکی بات ہے۔انشاء اللہ ہم کل بھی یہ کام جاری رکھیں گے۔انہوں نے کہاکہ میرے سامنے رجافاروق حیدرجذباتی ہوگئے۔
کشمیریوں سے بڑی محبت کرتے ہیں۔انہوں نے کہاکہ جس ایجنڈے پرہم کام کررہے تھے مجھے بڑایقین تھا کہ دومہینے یااگلے سال تک روزگارہوناتھا۔میرے لیے پاکستان اور آزادکشمیرکانوجوان دونوں مقدس ہیں۔میں دونوں کے نوجوانوں سے پیارکرتاہوں۔میں سمجھتاہوں کہ آزادکشمیرکے نوجوانوں کوبھی پاکستان کی ترقی میں اتناحصہ ملناچاہیے تھا۔جتناپاکستانی جوانوں کوملتاہے۔
اگرمیں نااہل نہ ہوتاتوروزگارملتا،ترقی ہوتی،سب کوسستاانصاف ملتا۔اگرکسی نے جرم کی توتین یاچھ مہینے میں مجرموں کوکیفرکردارتک پہنچایاجاتا۔میرے بڑے پروگرام تھے لیکن جن پرپانی پھرگیا۔ووٹ کوعزت دینے والابڑااچھا نعرہ ہے۔نوازشریف نے خود نعرے لگائے۔ووٹ کوعزت دو،پاکستان اور پاکستانی قوم کوعزت دو۔اگریہ ہوگاتوپاکستان آگے بڑھے گاورنہ پاکستان بیٹھ جائے گا۔
انہوں نے شرکاء کے نعروں پرکہاکہ میری جان میری بات سنو۔انہوں نے نوازشریف کے ہاتھ صاف ہیں ۔میں نے حسن نوازسے تنخواہ نہیں لی لیکن میری چھٹی کروادی گئی۔کیااس پرنوازشریف نااہل ہوگیا؟انہوں نے عوام کومخاطب کرتے ہوئے کہاکہ کیاآپ سمجھتے ہیں نوازشریف کرپٹ ہے؟ جس پرلوگوں نے جواب دیاکہ نہیں۔ نوازشریف نے کہاکہ میں نے راجاصاحب کہاکہ کشمیرمیں چپے چپے پرہسپتال بنائیں ،یونیورسٹیاں بنائیں،سکول بنائیں ،یہ عوام جومانگتے ہیں ان کودیاجائے۔
مسلم لیگ ن کی حکومت آئے گی توجتناپیساچاہیے ہوگاہم دیں گے۔ابھی ہم نے آزادکشمیرکے ترقیاتی بجٹ کودوگنا کردیاہے۔میراخیال تھا کہ اس بجٹ میں ہرسال اضافہ ہوتارہے گا۔انہوں نے کہاکہ مظفرآباد بھی لاہورکے مقابلے کاشہربنے گا۔ہم بھرپورخدمت کرتے رہیں گے۔مظفرآبادسے میرپوردینہ تک چارروویہ موٹروے بنائی جائے گی۔یہ منصوبہ منظورہوچکاہے۔
اسی طرح مانسہرہ تک بھی موٹروے بنائی جائے گی۔انہوں نے کہاکہ اب میں پاکستان سے فارغ ہوگیاہوں راجا صاحب اب میری ڈیوٹی آزادکشمیرمیں لگادیں۔میں مذاق سے نہیں کہتاپاکستان میں نااہل ہوگیاہوں لیکن یہاں سے نااہل نہیں ہواہوں۔جب تک فیصلہ نہیں آتاتومیری ڈیوٹی یہاں لگنی چاہیے۔مجھے بڑی خوشی ہوگی مجھے پہاڑویسے ہی بڑے اچھے لگتے ہیں۔میں یہاں کی عوام کی خدمت کروں گا۔انہوں نے کہاکہ یہ محبت پیسوں سے نہیں ملتی۔یہ محبت اللہ انسانوں کے دلوں میں ڈالتاہے۔نوازشریف کے دل میں بھی بڑی محبت ہے۔میں آپ کاہوں اور آپ میرے ہیں یہ ساتھ کبھی نہیں ٹوٹے گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں