کراچی: محکمہ داخلہ سندھ نے سپریم کورٹ کے حکم کی روشنی میں چاروں صوبوں گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر کی حکومتوں کو نقیب اللہ محسود کے ماورائے عدالت قتل میں ملوث ایس ایس پی راؤ انوار کی گرفتاری کے لیے خط لکھ رہا ہے ۔دوسری جانب راؤ انوار کی گرفتاری کے لیے کراچی پولیس نے ایس ایس پی انویسٹی گیشن شرقی ذوالفقار مہر کی سربراہی میں ٹیم تشکیل دے دی ہے۔
دریں اثناء سہراب گوٹھ پر قائم محسود قبائل کے کیمپ پر لوگوں کی جانب سے تعزیت کا سلسلہ ہفتے کو بھی جاری رہا۔ ڈپٹی چیئرمین سینیٹ مولانا عبدالغفور حیدری نے بھی کیمپ کا دورہ کیا اور نقیب اللہ محسود کے ورثاء سے تعزیت کی اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ایک پولیس افسر پوری ریاست کے لیے چیلنج بن چکا ہے ، آخر اسے گرفتار کیوں نہیںکیا جاتا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں