ملکوال: وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہبازشریف نے سپریم کورٹ اور لاہورہائیکورٹ سے درخواست ہے کہ کرپشن کیسزپرفل بنچ بنادیں اگرمیں نے رشوت کھائی ہے تومیں توبہ کرکے سیاست چھوڑ دوں گا،ورنہ عمران خان توبہ کرکے سیاست چھوڑدے،زرداری صاحب سی پیک پرآپ کے دستخط ہیں تومنصوبے کیوں نہیں لگائے؟عمران خان کولیگل نوٹس دیاتاریخیں پڑ رہی ہیں لیکن خان صاحب پیش نہیں ہوتے۔
انہوں نے ملکوال میں منی موٹروے کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ عمران خان نے کہاکہ کے پی کوبجلی میں خودکفیل بنادوں لیکن ایک کلوواٹ بجلی نہیں دے سکا۔خان صاحب دن رات جھوٹ بولتے ہیں الزامات لگاتے ہیں۔عمران نے لاک آؤٹ کیا، دھرنے دیے،لیکن ہم نے صرف کام کیا۔چیلنج کرتاہوں کہ آپ نے ساڑھے چارسالوں میں مجھ پرتین الزامات لگائے کہ میں جاوید صادق سے 27ارب لیے۔
دوسراالزام لگایا کہ پاناما میں خان صاحب کو10ارب روپے کی رشوت دی۔میں نے خان صاحب کولیگل نوٹس دیاتاریخیں پڑ رہی ہیں لیکن خان صاحب جھوٹ پرجھوٹ بولتے جارہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ میں سپریم کورٹ یا لاہورہائیکورٹ سے درخواست ہے کہ ایک بنچ بنائیں اور عمران خان کے جھوٹے الزامات کاجلدازجلد فیصلہ کریں۔اگرمیں نے رشوت کھائی ہے تومیں توبہ کرکے سیاست چھوڑ دوں گا۔
اگرعمران خان جھوٹاثابت ہواتوتوبہ کرکے سیاست چھوڑدے۔انہوں نے عوام سے مخاطب ہوتے ہوئے کہاکہ وقت ضائع کرنے اور جھوٹ بولنے والے شخص کوحق پہنچتاہے کہ پاکستان کے عوام کی نمائندگی کرے؟انہوں نے کہاکہ ملکوال کے لوگوں آئندہ 2018ء کے الیکشن میں سوچ سمجھ کرفیصلہ کرناکہ عوام کی خدمت عمران خان نے کی ہے یا زرداری صاحب نے کی ہے؟ وزیراعلیٰ پنجاب نے کہاکہ زرداری صاحب آپ غلط بیانی کرتے ہیں کہ سی پیک آپ کامنصوبہ ہے۔زرداری سی پیک پرآپ کے دستخط ہیں تومنصوبے کیوں نہیں لگائے؟انہوں نے کہاکہ زرداری کہتاہے کہ شریف برادران کی کرپشن کاحساب لوں گا۔زرداری آپ تواپناحساب دے دیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں