ریاض(آئی این پی)سعودی عرب کے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز نے ایران کے سپریم لیڈر علی خامنہ ای کو “مشرق وسطی کا نیا ہٹلر” قرار دیدیا۔دارلحکومت ریاض میں امریکی اخبار ‘نیویارک ٹائمزکو تفصیلی انٹرویو میں سعودی رہنما نے کہا کہ ایرانی رہبر المعروف مرشد اعلی مشرق وسطی کا نیا ہٹلر ہے۔ انھوں نے اپنی بات جاری رکھتے ہوئے کہا کہ یورپ سے ہمیں یہی سبق ملتا ہے کہ ایسی صورتحال کے سامنےسر تسلیم خم کرنا کامیابی نہیں ہے۔ ہم نہیں چاہتے کہ نیا ہٹلر وہ سب کچھ یہاں (مشرق وسطی) میں کر گذرے جو یورپ میں کیا گیا۔انھوں نے یہ بات زور دے کر کہی کہ سعودی عرب داخلی طور پر جو بھی اقدامات کر رہا ہے، ان کا مقصد اپنی طاقت اور معیشت میں بہتری لانا ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ تہران مرشد اعلی کے ایما پر لبنان میں حزب اللہ، عراق میں الحشد الشعبی اور یمن میں حوثی ملیشیاوں کے ذریعے خطے میں مداخلت کرتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں