اسلام آباد: کیپٹن (ر) صفدر کا کہنا ہے کہ پارٹی حکم دے تو خود ہاتھ جوڑ کر دھرنیوالوں سے دھرنا ختم کرنے کی درخواست کرنے کیلئے تیار ہوں۔ تفصیلات کے مطابق مسلم لیگ ن کے رکن قومی اسمبلی اور نواز شریف کے داماد کیپٹن (ر) صفدر نے پیش کش کی ہے کہ پارٹی حکم دے تو خود ہاتھ جوڑ کر دھرنیوالوں سے دھرنا ختم کرنے کی درخواست کرنے کیلئے تیار ہوں۔
بات چیت سے یہ مسئلہ حل ہوجائے گا استعفوں تک نوبت نہیں آئے گی۔ یہ دھرنا نہیں عاشقوں کی محفل ہے عاشقوں سے عشق والا ہی بات کرسکتا ہے۔ میں روحانی طورپر 24گھنٹے عظیم محفلوں میں ہوتا ہوں۔ جب ضرورت محسوس کرونگا تو وہاں چلا جائوں گا۔ محمد صفدر نے مزید کہا ہے کہ کسی کے احتجاج پر استعفیٰ نہیں ہونا چاہیے،کل کو کسی اور کے استعفے کا مطالبہ کیا جائے گا، تو کیا ہو گا، ایسے استعفیٰ نہیں ہوتا پہلے انکوائریاں ہوتی ہیں۔
محمد صفدر نے مطالبہ کیا ہے کہ قایداعظم یونیورسٹی کے فزکس ڈپارٹمنٹ کا نام تبدیل کیا جائے۔ تمام علماء مشائخ کو چاہیے کہ وہ دھرنے والوں سے بات کریں۔ اس دھرنے کے نہیں بلکہ عمران خان اورطاہرالقادری کے دھرنے کے پیچھے قوتیں تھی۔ جاوید ہاشمی کی گفتگو کی ریکارڈنگ نکالیں سب واضح ہوجائے گا۔ محمد صفدر نے مزید کہا ہے کہ معاشرے میں اب این جی اوز چھا گئی ہیں۔ جمہوری ملکوں میں تشدد نہیں ہوتا بلکہ افہام تفہیم سے بات حل ہوجائے تو بہتر ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں