تحریک انصاف کی منحرف رکن قومی اسمبلی عائشہ گلالئی نے کہا ہے کہ عمران نیازی کے طالبان کے ساتھ تعلقات ہیں اور ان ہی کے کہنے پر اسلام آباد میں دھرنا دینے والے مذہبی جماعتوں کے کارکن انتشار پھیلا رہے ہیں۔ عدالتوں پر حیران ہوں کہ وہ دہشت گردوں کو ضمانت دے رہی ہیں۔ جس صوبے کو ہم نیا پاکستان کہتے ہیں وہاں 16 سال کی لڑکی کو توہین کرتے ہوئے ویڈیو بنائی گئی تو کیا خیبرپختونخوا میں یہ تبدیلی آئی ہے۔
نیازی صاحب نے واقع کی19روز گزرنے کے باوجود مظلوم لڑکی کیلئے ایک لفظ نہیں بولا۔ تحریک انصاف میں80فیصد لوگ تنگ ہیں۔ بدھ کو نیشنل پریس کلب اسلام آباد میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے عائشہ گلالئی نے کہا کہ علی امین گنڈا پور انسانیت کی توہین کرنے والے افراد کی سرپرستی کررہے ہیں۔ انصاف کی بات کرنے والوں نے کمزور لڑکی کے معاملے پر ایک لفظ بھی نہیں کہا۔
جس صوبے کو ہم نیا پاکستان کہتے ہیں وہاں 16 سال کی لڑکی کو توہین کرتے ہوئے ویڈیو بنائی گئی تو کیا خیبرپختونخوا میں یہ تبدیلی آئی ہے، ڈیرہ اسماعیل خان میں لڑکی کی بے حرمتی کی گئی، وہ بااثر شخص علی امین گنڈا پور تھا جس نے یہ سب کروایا، میڈیا نے مسئلے کو اجاگر کیا تو دوبارہ اس لڑکی کا بیان رکارڈ کیا گیا لیکن نیازی صاحب نے آج 19 روز گزرنے کے باوجود مظلوم لڑکی کے لیے ایک لفظ نہیں بولا، متاثرہ لڑکی کی ایف آئی آر بھی تھانے میں درج نہیں کی گئی، یہ لوگ اگر اقتدارمیں آگئے تو ملک کا خدا ہی حافظ ہے۔
انہوں نے کہا کہ علی امین گنڈا پور تحریک انصاف میں منشیات کے ٹولے کے لوگ ہیں اور خود پٹواریوں سے پیسے لینے میں ملوث ہیں، عمران نیازی جو انصاف کی بات کرتے ہیں آج کتنے دن گزر گئے انہوں نے اس لڑکی کے بارے میں کوئی بات نہیں کی۔عائشہ گلالئی نے کہا کہ میں عدالتوں پر حیران ہوں کہ وہ دہشت گردوں کو ضمانت دے رہی ہیں، پی ٹی وی پر حملہ کرانے والے دہشت گرد عمران نیازی کو عدالت نے ضمانت کیوں دی، علی امین کو وڈیرہ بننے کا شوق ہے اور ان کی گاڑی سے جو نکلا سب کو پتا ہے، میں بہت اچھے طرح ان لوگوں کو جانتی ہوں، ان کے خوف سے صحافی اور ڈی سی سمیت ہر طبقہ ڈرتا ہے کوئی ان کا کوئی مقابلہ نہیں کر سکتا۔
عائشہ گلالئی کا کہنا تھا کہ عمران نیازی کے طالبان کے ساتھ تعلقات ہیں اور ان ہی کے کہنے پر اسلام آباد میں دھرنا دینے والے مذہبی جماعتوں کے کارکن انتشار پھیلا رہے ہیں، تحریک انصاف میں80فیصد لوگ تنگ ہیں اور پارٹی میں ایک مخصوص ٹولہ ہے جو خواتین کے عزت و تقدس کا خیال نہیں رکھتے۔انہوں نے مزید کہا کہ عمران کی تبدیلی اور کے پی کے کی ماڈل پولیس اس واقعے کے بعد دنیا کو نظر آچکی ہے، پرویز خٹک کے پی کے میں ناظموں کو لڑوارہے ہیں، انہوں نے صوبے میں ایک ناظم کو ہٹا کر اپنے بھتیجے کو ناظم بنوا دیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں