اسلام آباد: نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے معروف صحافی چوہدری غلام حسین نے کہا کہ آج کی بڑی خبر یہ ہے کہ میاں محمد نواز شریف کے نام سے جو ن لیگ بنی ہوئی تھی اس کا بس اب چل چلاﺅ ہے کیونکہ مصدقہ اطلاعات ہیں کہ پارلیمنٹ کے 342 اراکین میں ن لیگ کے 187اراکین تھے جن کی بڑی اکثریت جو اب مسلم لیگ کے نام سے ہی کام کرے گی اور یہ کام مسلم لیگ میں شریف خاندن اور نواز شریف کی صدارت اور قیادت کے بغیر ہوگا۔
جب ان اراکین سے پوچھا جاتا ہے کہ آپ نے نواز شریف کو کیوں چھوڑا تو ان کا کہنا ہے کہ ہم نے نواز شریف کو نہیں چھوڑا ۔ لیکن نواز شریف اب قانون اور آئین کی نظر میں نا اہل ہو گئے ہیں۔ چوہدری غلام حسین نے بتایا کہ شاہد خاقان عباسی کی قیادت میں وفاقی حکومت اور شہباز شریف کی قیادت میں صوبائی حکومت آخری ہفتوں میں جا رہی ہیں اور آپ دیکھیں گے کہ ان کی جگہ اب ایک نئی لیڈر شپ آ رہی ہے۔
چوہدری غلام حسین نے کہا کہ میری ہمدردی شہباز شریف کے ساتھ ہے۔ان کے کچھ لوگوں کا کہنا ہے کہ آپ نے ختم نبوتﷺ کی شقیں ہٹائی ہیں اسی لیے اب ہم پر حرام ہے کہ ہم آپ کے کسی بھی بل کے لیے ووٹ کریں۔ جنہوں نے ختم نبوتﷺ کی شق میں ردو بدل کی آپ پہلے ان کو نکالیں ۔ اس معاملے پر کسی نے زاہد حامد سے پوچھا تو انہوں نے بتایا کہ میں کیا کروں مجھے تو قیادت نے لندن سے فون کیا تھا اور کہا تھا کہ یہ کریں سو میں نے کر دیا۔ چوہدری غلام حسین نے مزید کیا کہا آپ بھی دیکھیں:

اپنا تبصرہ بھیجیں