لاہور/فیصل آباد/لیہ (آئی این پی) پنجاب میں سفید دھند خون سے لال ہوگئی۔ نظر نہ آنے کی وجہ سے ایک سو دو ٹریفک حادثات میں سترہ افراد جاں بحق جبکہ درجنوں زخمی ہو کر ہسپتالوں میں پہنچ گئے‘پنڈی بھٹیاں میں 11حادثات میں 8افراد جان کی بازی ہار گئے ‘لیہ میں 20حادثات میں 5افراد جاں بحق ‘جہلم میں 2، بھکر میں 15اور چنیوٹ میں 46حادثات ہوئے‘پروازوں میں تاخیر اور ریلوے آپریشن بھی متاثر ہوا ہے۔تفصیلات کے مطابقپنجاب میں دھند کے باعث 102 ٹریفک حادثات میں 17 افراد جاں بحق، جبکہ درجنوں زخمی ہوئے۔ سب سے زیادہ جانی نقصان پنڈی بھٹیاں کے علاقے میں ہوا جہاں اب تک گیارہ حادثات میں 8افراد جان کی بازی ہار چکے ہیں۔لاہور ، فیصل آباد ، ملتان اور گوجرانوالہ سمیت پنجاب کے مختلف شہر مسلسل آلودہ دھند کی لپیٹ میں ہیں، جس کی وجہ سے ٹرینوں کی آمد و رفت شدید متاثر ہوئی ہے، ٹرینیں 4 سے 13 گھنٹے تک کی تاخیر کا شکار ہیں۔ ریسکیو حکام کے مطابق فیصل آباد میں شدید دھند کے باعث حادثات میں 3 افراد جان کی بازی ہار گئے۔فیصل آباد میں شدید دھند کے باعث ہونے والے 2 ٹریفک حادثات میں 3 افراد جاں بحق ہو گئے، پہلا حادثہ ستیانہ روڈ پر پیش آیا، جہاں ایک ٹرک خرابی کے باعث سڑک کے کنارے کھڑا تھا، مخالف سمت سے آنے والامنی ٹرک اس سے ٹکرا گیا جس سے منی ٹرک میں سوار 2افراد جاں بحق اور ایک زخمی ہوگیا۔دوسراحادثہ سرگودھا روڈ پر پیش آیا جہاں ایک ٹرک نے موٹر سائیکل سوار کو کچل دیا، دونوں حادثات دھند کے باعث پیش آئے۔ لیہ میں بیس حادثات میں پانچ افراد جاں بحق ہوئے۔ جہلم میں دو، بھکر میں پندرہ اور چنیوٹ میں چھیالیس حادثات ہوئے۔پروازوں میں تاخیر اور ریلوے آپریشن بھی متاثر ہوا ہے۔ پی آئی اے کی اسلام آباد سے آنے والی پرواز پی کے سکس فائیو تھری واپس اسلام آباد روانہ کی گئی، جبکہ شاھین ایئر کی کراچی سے آنے والی پرواز ون فور فور واپس کراچی بھجوانا پڑی۔دھند کی وجہ سے تیز گام، کراچی ایکسپریس، قراقرم ایکسپریس، علامہ اقبال ایکسپریس، اور عوامی ایکسپریس سمیت دیگر ریل گاڑیاں تاخیر سے پہنچ رہی ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں