دبئی میں حکومت نے کروڑوں ڈالر کی لاگت سے مارز سٹی کی تعمیر کا اعلان کیا ہے جس میں سرخ سیارے مریخ پر ممکنہ زندگی کا ماحول تیار کیا جائے گا۔دبئی کے حکام کے مطابق 13 کروڑ 50 لاکھ ڈالر کی لاگت سے یہ شہر 19 لاکھ مربع فٹ پر مشتمل ہو گا اور اس کےساتھ کسی جگہ کی سب سے بڑی نقل کا اعزاز بھی حاصل ہو گا۔اس شہر میں محققین ایک برس تک قیام کے دوران مختلف تجربات کریں گے جس میں مریخ پر ندگی کے لیے ضروری خوراک، پانی اور توانائی کا حصول شامل ہے۔یہ منصوبہ دبئی کی ‘مریخ 2117’ منصوبہ بندی کا حصہ ہے جس کے تحت آئندہ سو برس کے دوران مریخ پر پہلی انسانی آبادی کا قیام عمل میں لانا ہے۔مارز سائنس سٹی منصوبے کا اعلان حال ہی میں متحدہ عرب امارات کی حکومت کے ابوظہبی میں ہونے والے سالانہ اجلاس میں کیا گیا۔اس شہر میں جدید لیبارٹریوں کے ذریعہ مریخ کے سخت موسم اور مریخ کی زمینی ساخت کی نقل تیار کی جائے گی۔شہر میں ایک عجائب گھر بھی موجود ہو گا جس میں خلا میں حاصل کی گئی کامیابیوں کو پیش کیا جائے گا۔اس عجائب گھر کی دیواریں تھری ڈی پرنٹر کی مدد سے تیار کی جائیں گی اور اس میں متحدہ عرب امارات کے صحرا سے ریت لا کر استعمال کی جائے گی۔عجائب گھر اور لیباٹریوں کے علاوہ مارز سٹی یہاں پر کام کرنے والے سائنس دانوں کا گھر بھی ہو گا۔اس شہر کے ڈیزائنرز کا کہنا ہے کہ یہ تجربہ غیر موافق ماحول میں پائیداد زندگی کے حوالے سے مستقبل کی ایجادات میں اہم کردار اور حوالہ ہو گا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں