واشنگٹن (آئی این پی ) بھارت کی ہٹ دھرمی کے باعث پاکستان اور بھارت کے درمیان پانی کے معاملے پر ہونے والے مذاکرات ناکام ہوگئے ، بھارت اس حوالے سے تحفظات دور نہ کرسکا ،تفصیلات کے مطابق واشنگٹن میں عالمی بینک کے ہیڈکوارٹرزمیں پاک بھارت آبی سیکریٹری سطح کے مذاکرات ناکامہوگئے۔مذاکرات میں بھارت کشن گنگا،رتلے ہائیڈروالیکٹرک پلانٹ کی تعمیرپرپاکستان کے تحفظات دورنہ کیے۔ذرائع کے مطابق پاک بھارت آبی سیکریٹری خارجہ مسئلہ حل کرنے کے لیے فورم کے چنائوپراتفاق نہ کرسکے،بھارت ہٹ دھرمی سے بازنہ آیا اورآبی تنازع حل کرنے کے لیے پیش کردہ ایک بھی آپشن پربھی اتفاق نہ کیا۔پاکستان نے معاہدے کے تحت عالمی بینک سے ثالثی کورٹ پینل کے قیام کامطالبہ کیا ہے۔واضح رہے کہ مذاکرات میں پاکستانی وفد کی قیادت سیکرٹری واٹرریسورس ڈویژن عارف احمدکررہے تھے جبکہ پانی و بجلی کی وزارت کے سیکرٹری یوسف نسیم کھوکھر، انڈس واٹر ٹریٹی کے لیے ہائی کمشنر مرزاآصف بیگ اور جوائنٹ سیکرٹری پانی سید مہر علی شاہ بھی وفد میں شامل ہیں۔اس سے قبل دونوں ملکوں کے درمیان دوروزہ مذاکرات یکم اگست کوہوئے تھے جس میں یہ طے پایاتھا کہ بعض امورپردونوں ممالک کے وفود اپنے اپنے ممالک میں حکومتوں پرمزیدمشاورت کے بعد مذاکرات کے اگلے دور میں شریک ہوں گے۔دوسری طرف مودی (آج ) دنیا کے دوسرے بڑے سردار سرور ڈیم کا افتتاح کریں گے ، مودی کی سالگرہ بھی ہے ، ڈیم کا سنگ بنیاد سابق وزیراعظم جواہر لعل نہرو نے 1956 میں رکھا تھا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں