اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)این اے 120 میں بڑے انتخابی جلسے سے خطاب کرتے ہوئے سینیٹر سراج الحق کا کہنا تھا کہ نوازشریف نے اولیاءکے شہر لاہور کو دنیا بھر میں بدنام کیاہے ، نوازشریف کبھی سپریم کورٹ اور کبھی عوام سے گلہ کرتے ہیں اور پوچھتے پھرتے ہیںکہ مجھے کیوں نکالا ؟ اسے یہ پتہ نہیں کہ اسے اللہ نے پکڑاہے ، اس نے رات کے اندھیرے میں عاشق رسول ممتاز قادری کو شہیدکرایا ۔ نوازشریف کو تو مسجد نبوی ﷺ میں بھی مردہ باد کے نعرے سننے پڑے ، نوازشریف کے لیے اب بھی توبہ کا دروازہ کھلاہے ، اللہ
اور عوام سے معافی مانگ کر اپنے جرائم کا اعتراف کر لیں ،کسی سرکاری یا غیر سرکاری اہلکار نے یا حکومتی گلوبٹوں نے دھاندلی کی کوشش کی تو اس سے موقع پر ہی نپٹیں گے .سینیٹر سراج الحق نے کہاکہ ہم منتخب ہونے کے بعد پہلا کام یہ کریں گے کہ اگر نوازشریف یا ان کے خاندان کا کوئی فرد بیمار ہو جائے تو اس کا علاج لاہور میں ہوسکے اور انہیں لندن اور نیویارک نہ جاناپڑے ، نوازشریف کے نااہل ہونے کے باوجود کسی غریب مسلم لیگی کی باری نہیں آئی پھر ان کی بیگم اور پھر ان کی بیٹی ، کیا یہ جمہوریت ہے ؟ہم غریب عوام کو استحصال سے بچانے کی جدوجہد کر رہے ہیں ، اگر آپ کے بنگلے حرام کی کمائی کے بنیں تو جا کر سپریم کورٹ کو بتائیں ، دولت کہاں سے آئی ؟ عجیب بات ہے کہ ان کے پاس اربوں اور کھربوں کی دولت ہے مگر آمدنی کے ذرائع کا پتہ نہیں ، ہم مزدور کو کارخانے اور کسان کو کھیتوں کی پیداوارمیں شامل کرنا چاہتے ہیں ، عوام کرپشن کےخلاف اپنے ووٹ کا استعمال کریں تاکہ پاکستان کو حقیقی معنوں میں ایک اسلامی فلاحی ریاست بنایا جاسکے ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں