اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)پاکستان میں اس وقت سیاسی ماحول میں گرما گرمی حلقہ این اے 120کی وجہ سے دیکھنے کو آرہی ہےاور حلقہ این اے 120میں اصل مقابلہ پاکستان مسلم لیگ ن اور تحریک انصاف میں ہوتا نظر آرہا ہے اور دونوں طرف کے سپورٹر ایڑی چوٹیکا زور لگاتے اور مخالف فریق کے خلاف عوامی رائے تبدیل کرنے کیلئے مختلف حربے استعمال کرتے نظر آتے ہیں۔ نادیہ خٹک جنہیں تحریک انصاف کی ایک نہایت متحرک ورکر کے طور پر جانا جاتا ہے ان دنوں لاہور میں حلقہ این اے 120کی انتخابی مہم کو گرما رہی ہیں مگر محسوس ہوتا ہے کہ عوام کا رجحان ن لیگ کی جانب زیادہ ہے ۔ نادیہ خٹک کو عوامی رائے اور رجحان کو پرکھے بغیر لاہور کی سڑکوں اور گلیوں میں جب نکلیں اور عوام سے براہ راست ان کی رائے معلوم کرنے اور انتہائی سیاسی انداز میں لیگی ورکرز کو زچ کرنے کی کوشش کے دوران شدید شرمندگی کا سامنا کرنا پڑ گیا، نادیہ خٹک نے جب ایک راہگیر موٹر سائیکل سوار کو روک کر نواز شریف کو کرپٹ قرار دینے کی کوشش کی تو راہگیر موٹر سائیکل سوار نے انہیں ایسا کرنے سے روکا اور کہا کہ نواز شریف کرپٹ نہیں ۔ اسی طرح ایک اور جگہ پر نادیہ خٹک ن لیگی ورکروں کے گھیرے میں آگئیں اور انہوں نے وہاں نواز شریف کے حق میں نعرے لگا کر نادیہ خٹک کو خفت میں مبتلا کر دیا اور انہوں نے وہاں سے راہ فرار اختیار کرنے میں ہی اپنی عافیت سمجھی۔نادیہ خٹک کے ساتھ لاہور کی سڑکوں اور راستوں پر کیا کچھ ہوتا رہا۔۔ویڈیو ملاحظہ کریں!

اپنا تبصرہ بھیجیں