کراچی: جامعہ کراچی وائس چانسلر ڈاکٹر اجمل نے کہا ہے کہ سمجھ نہیں آ رہا کہ جامعہ کراچی کے واقعہ کو اتنا کیوں ہائی لائٹ کیا جا رہا ہے ، معمولی واقع کو بڑھا چڑھا کر پیش کیا جاتا ہے ، ایک دو واقعات پر ہمیں اتنا پریشان ہونے کی ضرورت نہیں۔ انہوں نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ جامعہ کراچی کے طلباء اور اسا تذہ پر ہمیں فخر ہے ہمارے طلباء اور اساتذ ہ کو موقع فراہم کیا جائے،سکیورٹی دینا ہمارا نہیں بلکہ سکیورٹی اداروں کا کام ہے، سکیورٹی اداروں کی تجویز کا انتظار ہے سکیورٹی کے مسئلے کے لئے ہم اداروں کے ساتھ ہر ممکن تعاون کرنے کے لئے تیار ہیں بلکہ جامعہ کراچی کے جتنے بھی مسائل ہیں ہم سب کے سامنے لائیں گے ۔
چھوٹی خامیوں کو اگر اس طرح بیان کیا جائے گا تو جامعہ کراچی کو بہت نقصان ہو ۔ سکیورٹی اداروں نے ہمیں کوئی معلومات نہیں دی ہے ہم ہمیشہ سے سکیورٹی اداروں کے ساتھ کھڑے ہیں مجھے نہیں پتہ تھا کہ کس جگہ سے کس کو گرفتار کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ مسائل ہر جگہ ہوتے ہیں ہمیں مل کر لوگوں کے مائنڈ سیٹ کو بدلنا ہو گا اوراجلاس میں صرف طلباء کے مسائل کو حل کرنے پر بات کئی گئی تھی تا کہ مسائل پر قابو پایا جا سکے ،طلباء کا ڈیٹا سکیورٹی اداروں کو دینے کا کوئی فیصلہ نہیں کیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں