لاہور:نیب ریفرنس کی کاپی شریف خاندان کے قانونی معاون کے پاس پہنچ چکی ،ریلیف کے لئے کمزور ترین شواہد رکھے گئے ہیں ، ن لیگ کی مختلف سیاسی جماعتوں کو 62,63پرتعاون کے عوض سینٹ نشتوں کی پیشکش،جارحانہ حکمت عملی کے لئے بھی رابطہ، شریف خاندان نے نئی حکمت عملی کے تحت کیسز میں بچنے کے لئے نیب میں اپنے ہمدردوں سے مدد لینا شروع کردی،ذرائع کے مطابق نیب کی جانب سے شریف خاندان کے خلاف ریفرنس تیار کئے گئے ریفرنسز میں کمزور ترین شواہد رکھے ہیں کہ کیس چلنے پر شریف خاندان کو اس میں رلیف ملے سکے گا ۔
ذرائع کا کہنا ہے کہ نیب کی طرف سے تیار کئے گئے ریفرنس کی ایک کاپی شریف خاندان کے ایک قانونی معاون کے پاس موجود ہے جس نے اس پر اب سے کام شروع کر دیا ہے ،دوسری جانب ن لیگ کے 62,63کے خاتمے کے لئے تعاون کے عوض سیاسی جماعتوں کو سینٹ الیکشن میں سپورٹ کی پیشکش کر رہی ہے۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ ن لیگ پنجاب سے 3سے 4سینٹ کی سیٹیں دوسری جماعتوں کو دینے کے لئے تیار بیٹھی ہیں ۔
دو سیاسی رہنماؤں نے اپنی پارٹی سے مشاورت کے لئے وقت مانگا ہے ،اس سے پہلے یہ دونوں سیاسی جماعتیں آرٹیکل 62,63میں ترمیم کے حوالے سے واضح طور پر انکار کر رہی تھیں ۔ ۔ ذرائع کے مطابق ن لیگ کی وکلاء کے ذریعے عدلیہ پر پریشر ڈالنے کی حکمت عملی اس طرح قائم رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے اور ملتان ہائی کورٹ بار کے صدر کی پیشی کے موقع پر ن لیگ کے وکلاء اعلی عدلیہ کے خلاف احتجاج کرنے کی کوشش کریں گے ۔ وفاقی وزرا بھی مختلف سیاسی جماعتوں سے رابطے کر رہے ہیں اور 15ستمبر تک رابطوں کو مکمل کرنے کے بعد ن لیگ نئی حکمت عملی کے تحت جارحانہ طریقے سے سامنے آئے گی ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں