اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) ہماری ٹیکنالوجی تو وہی پرانی ہے جو امریکیوں نے کی تھی ،جوہری ٹیکنالوجی کے میدان میں شمالی کوریا پاکستان سے بہت آگے ،چین اور روس اسے کبھی تنہا نہیں چھوڑیں گے، ڈاکٹر عبدالقدیر خان کی برطانوی نشریاتی ادارے کے پروگرام میں گفتگو۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان کے مایہ ناز ایٹمی سائنسدان ڈاکٹر عبدالقدیر خان نے برطانوی نشریاتی ادارےکے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے انکشاف کیا ہے کہ اگر یہ سوال کیا جائے کہ کیا شمالی کوریا جوہری ٹیکنالوجی بناسکتا ہے یا نہیں تو ہاں وہ بناسکتے ہیں اور اس کا اندازہ انہیں شمالی کوریا اور پاکستان کے درمیان میزائل پروگرام کے حوالے سے رابطوں کے دوران ان کے ماہرین سے ملاقاتیں اور کام کرنے سے ہوا۔جوہری ٹیکنالوجی میں شمالی کوریا پاکستان سے بہت آگے ہے۔عبدالقدیر خان نے بتایا کہ میزائل پروگرام کے حوالے سے ان کا شمالی کوریا دو مرتبہ آنا جانا ہوا، ان کی ٹیکنالوجی پاکستان سے بہت بہتر ہے۔ وہاں کے ماہرین بہت سمجھدار ہیں اور زیادہ تر روس سے تعلیم یافتہ ہیں۔ تاہم وہ اس امکان کو رد کرتے ہیں کہ شمالی کوریا نے کبھی پاکستان کی ٹیکنالوجی اور علم سے کوئی فائدہ اٹھایا ہوگا۔ ’سوال ہی پیدا نہیں ہوتا‘۔ ان کی مجموعی ٹیکنالوجی ہماری ٹیکنالوجی سے بہت بہتر ہے۔ ہماری ٹیکنالوجی تو وہی پرانی ہے جو امریکیوں نے کی تھی، عام ٹیکنالوجی، ہم نے کبھی نہ ان کی فکیلٹی دیکھی اور نہ ہی اس معاملے پر بات کی، ہم ان کے ساتھ میزائل کے پروگرام کرتے تھے جو سب کو پتہ ہے اور پاکستانی حکومت نے خود اعلان کیا کہ ہمارا ان سے رابطہ تھا۔ روس اور چین نے ویتنام اور امریکہ کی جنگ میں بھی ویتنام کا ساتھ دیا تھا اور اب وہ شمالی کوریا کو بھی کبھی تنہا نہیں چھوڑیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں