لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)برطانیہ کے شاہی خاندان کی تاریخ تقریبا ایک ہزار دو سو سال پرانی ہے اور یہ خاندان اپنے شاہی انداز کی وجہ سے دنیا بھر میں منفرد حیثیت رکھتا ہے۔دنیا کے ہر شعبے میں جہاں کچھ اصو ل ہوتے ہیں وہیں شاہی خاندان کے 14ایسے اصول ہیں جن سے ملکہ بھی انحراف نہیں کر سکتی۔1۔ شاہی خاندان کی ذمہ داری ہے کہ ٹاور آف لندن پر ہر وقتکم از کم 6جنگلی کوے ہر وقت موجود ہوں۔یہ اس لیے کہ اگر کوئی بھی کوا موجود نہ ہوا توشاہی روایت کے مطابق کنگڈم کے تباہ ہونے کا ڈر ہے ۔2۔غیر شاہی لوگ شاہی خاندان کے افراد کو ہاتھ نہیں لگا سکتے۔3۔ شاہی خاندان کے لوگ ووٹ نہیں ڈال سکتے۔4۔وہ اپنا سیاسی دفتر نہیں بنا سکتے۔5.اثاثوں کے مکمل اختیارات ایک ہی شاہی فرد کے پاس نہیں ہو سکتے۔6۔ شاہی خاندان کے لوگ ’شیل فش‘ نہیں کھا سکتے۔7۔کھانے کی میز پر یا کسی بھی تقریب میں ہال میں داخلہ عہدے کی بنا پر ہوتا ہے یعنی سب سے پہلے ملکہ پھر اس سے کم عہدوں کے افراد ۔8۔اگرچہ یہ اصول 2011میں بدلا گیا لیکن شاہی خاندان کے افراد رومن کیتھولک نہیں ہو سکتے۔اُن کے لیے ضروری ہے کہ چرچ آف انگلینڈ کے وفادار رہیں۔9۔اُن کے پہناوے پُروقار ہوں۔10۔وہ ’فَر‘ نہیں پہن سکتے۔(لیکن اس اصول میں بھی رد و بدل کی جا چکی ہے)۔11.۔ان کے لیے ضروری ہے کہ تحائف خوشدلی سے قبول کریں۔12۔ شاہی خاندان کے لوگ اکٹھے سفر نہیں کر سکتے ۔(اب سفری سہولیات کی وجہ سے اس میں تھوڑی تبدیلی دیکھنے کو ملی ہے)۔13۔تمام افراد کرسمس ایک ساتھ منائیں گے۔14۔ شاہی خاندان کا کوئی بھی فرد ملکہ کے کھانا ختم کرنے کے بعد کھانا جاری نہیں رکھ سکتا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں