اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک)سابق وزیراعظم نواز شریف کی ریلی کو داعش کی جانب سے نشانہ بنانے کی اطلاع، خودکش حملہ ہو سکتا ہے، حساس ادارے نے پنجاب حکومت کو تحریری طور پر آگاہ کر دیا۔تفصیلات کے مطابق حساس ادارے کی جانب سے پنجاب حکومت کو لکھے گئے اپنے ایک مراسلے میں میاں نواز شریف کی ریلی میں کالعدم تنظیم داعش کی طرف سےدہشتگرد کارروائی کے حوالے سے آگاہ کیا گیا ہے۔ ہو سکتی ہے،حساس ادارے نے چیف سیکرٹری پنجاب ، ہوم سیکرٹری پنجاب ، سیکرٹری وزیراعلی پنجاب کو تحریری طور پر اگاہ کر دیا ہے ۔چیف سیکرٹری پنجاب کیپٹن (ر) زاہد سعید ، ایڈیشنل چیف سیکرٹری ہوم میجر (ر) اعظم سلمان اور سیکرٹری ٹو وزیراعلی پنجاب کومراسلہ نمبرU.O.NO.1586.89 میں حساس ادارے کی جانب سے کہا گیا ہے کہ ملنے والی خفیہ اطلاعات کے مطابق داعش سابق وزیر اعظم کی ریلی پر خود کش حملہ کر سکتی ہے اس لئے اس ریلی و جلسہ کو منسوخ کیا جائے یا پھر حفاظتی اقدامات اٹھائے جائیں تاکہ کہ کوئی بھی ناخوشگوار واقعہ پیش نہ آسکے۔واضح رہے کہ سپریم کورـٹ سے نا اہلی کے بعد سابق وزیراعظم میاں محمد نواز شریف نے مری سے ہی اپنا گھر واپسی کا عوامی سفر شروع کر دیا تھا جس کا باقاعدہ آغاز پنجاب ہائوس اسلام آباد سے تین روز قبل کیا۔ اس سے قبل بھی حساس ادارے سابق وزیراعظم نواز شریف کو دہشتگردی خطرات سے متعلق آگاہ کر چکے ہیں اور انہی خطرات کو دیکھتے ہوئے ن لیگ نے اپنے قائد کی حفاظت کیلئے ایک بم پروف کنٹینر بھی تیار کرا رکھا ہے تاہم قائد کی حفاظت تو یقینی بنانے کی کوشش کی گئی مگر ریلی میں شریک ہزاروں افراد کی زندگیاں کسی بھی دہشتگردکارروائی کی صورت میں شدید خطرے میں ہیںاور اس حوالے سے پہلے بھی انتباہ جاری کئے جا چکے ہیں۔ خیال رہے کہ میڈیا رپورٹس کے مطابق راولپنـڈی کچہری چوک سے جہلم تک نواز شریف کے قافلے کی رفتار بھی انہی خدشات کی وجہ سے اچانک بـڑھا دی گئی تھی اور روات، گوجر خان، سوہاوہ، دینہ میں ہزاروں کی تعداد میں نواز شریف کے استقبال کیلئے جمع افراد کو نظر انداز کر کے جہلم پہنچا گیا تھا۔ بی بی سی کیرپورٹ کے مطابق وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق کی راولپنـڈی میں چند اجنبی لوگوں سے ملاقات کے بعد نواز شریف کی گاڑی میں بیٹھا اور قافلے کی رفتار انتہائی تیز ہو جانے کے پیچھے بھی یہی وجہ تھی۔ وفاقی وزیر ریلوے کے ذریعے حساس اداروں نے نواز شریف کو دہشتگردی خطرے سے ہی آگاہ کیا تھا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں