لاہور(آن لائن)لاہور ہائیکورٹ نے مسلم لیگ (ن)کو اس کے نام سے الیکشن میں حصہ لینے سے روکنے سے متعلق درخواست ناقابل سماعت قرار دیکر مسترد کر دی جبکہ چیف جسٹس سید منصورعلی شاہ نے ریمارکس دیئے ہیں کہ ایک شخص کی نا اہلی سے پوری پارٹی پر پابندی نہیں لگا سکتے، سیاسی پارٹی کا مطلب ایک شخص نہیں ہوتا۔تفصیلات کے مطابق چیف جسٹس سید منصور علی شاہ نے عاصم عزیز ایڈووکیٹ کی درخواست پر سماعت کی۔جس میں درخواست گزار نے موقف اختیار کیا نواز شریف کی نااہلی کے بعد ن لیگ کی الیکشن کمیشن میں رجسٹریشن از خود ختم ہوگئی۔ عاصم عزیز ایڈووکیٹ نے عدالت سے استدعا کی کہ مسلم لیگ (ن)کو اس نام سے الیکشن میں حصہ لینے سے روکا جائے۔ جس پر چیف جسٹس سید منصور علی شاہ نے ریمارکس دیتے ہوئے کہا ایک شخص کی نا اہلی سے پوری پارٹی پر پابندی نہیں لگا سکتے، سیاسی پارٹی کا مطلب ایک شخص نہیں ہوتا۔ عدالت نے مسلم لیگ نواز کو الیکشن لڑنے سے روکنے کی درخواست ناقابل سماعت قرار دے کر مسترد کر دی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں