جدہ(مانیٹرنگ ڈیسک) مکہ سے مدینہ سفر کی مسافت جلد از جلد طے کرنے کے لیے تیز ترین ٹرین کا کامیاب تجربہ کیا گیا۔عرب میڈیا کے مطابق سعودی ریلوے آرگنائزیشن نے ٹرین کی آزمائش کا کامیاب تجربہ منگل کے روز کیا، یہ ٹرین مکہ، مدینہ اور جدہ کے درمیانچلائی جائے گی۔نئی ٹرین سروس کے بعد دونوں شہروں کے درمیان کا سفر 90 منٹ یعنی دیڑھ گھنٹے میں طے کیا جاسکے گا کیونکہ ٹرین کی اسپیڈ 330 کلومیٹر فی گھنٹہ ہے۔ مکہ سے مدینہ کے درمیان سفر میں اس وقت تقریباً 4 گھنٹے کی مسافت لگتی ہے مگر اس نئی سروس کے
بعد معمر ترین عازمین جلد از جلد سفر کرسکیں گے۔تیز ترین ٹرین مکہ ، مدینہ کے درمیان طے ہونے والی مسافت کو مختصر کرے گی اور یہ جدہ کے نئے ائیرپورٹ شاہ عبداللہ اکنامک سٹی تک جائے گی۔ سعودی حکام کے مطابق ٹرین سروس کا باقاعدہ آغاز آئندہ برس 2018 میں کیا جائے گا اور اس سروس سے سالانہ 6 کروڑ افراد استفادہ حاصل کرسکیں گے۔پراجیکٹ منیجر کا کہنا ہے کہ ’’اس منصوبے پر کام تیزی سے جاری ہے اور جلد ہم اس منصوبے کا افتتاح کردیں گے، سعودی حکومت کی جانب سے اس ٹرین سروس کے آغاز کا اعلان جلد متوقع ہے کیونکہ ہمارا منصوبہ اختتامی مراحل میں ہے‘‘۔



اپنا تبصرہ بھیجیں