اسلام آباد (این این آئی) پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے کہاہے کہ جب ان کی پارٹی نے اسلام آباد کو لاک ڈائو ن ( شہر کی ناکہ بندی) کر نے کا اعلان کیا تھا تو سپریم کورٹ کے ایک جج نے ان سے ریکوئسٹ(درخواست)کر کے کہا تھا آپ سپریم کورٹ آجائیں ۔یہ بات تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان نے ایک نجی ٹی وی کو انٹرویو دیتے ہوئے کہی تھی جس کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی ہے ۔ویڈیو میں عمران خان نے کہا کہ جب ہم نے اسلام آبا د کو لاک ڈائو ن کرنے کا فیصلہ کیا تھا تو مجھے یاد ہے کہ عدلیہ بیٹھی تھی او ر مجھے سپریم کورٹ کے ایک جج نے ریکوئسٹ (درخواست)کی تھی کہ سڑکوںپر بیٹھنے کے بجائے یہاں (سپریم کورٹ)آجائیں ۔ اس موقع پر ٹی وی اینکر نے عمران خان سے سوال کیا کہ کیا موجودہ یا ریٹائر جج نے آپ سے رابطہ کیا تھا تو عمران خان نے جواب دیا کہ وہی جو بینچ تھاشاید جسٹس کھوسہ نے کہا تھا ۔یہ جو بینچ بیٹھا تھا فرسٹ کو (پہلی تاریخ کو)اس کے بعد فیصلہ کیا تھاکہ دو تاریخ کو ہم کال آف کررہے ہیں (لاک ڈائون ختم کررہے ہیں) جج نے ہم سے کہا آپ یہاں آ جائیں ۔انہوںنے ریکوئسٹ (درخواست)کی تھی کہ آپ عدالت میں آ ئیں ۔عمران خان نے کہاکہ میں آئین پر چلنے والا اور جمہوریت پسند ہوں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں