اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) نواز شریف تاحیات اہل نہیں ہوئے، 5 سال بھی نہیں بلکہ۔۔۔ ایک ایسی خبر آ گئی جس نے پی ٹی آئی والوں کی خوشیوں کو ماند کردیا،تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ کے فیصلے کے بعد الیکشن کمیشن آف پاکستان نے نواز شریف کوعہدے سے ہٹانے کا نوٹیفیکیشن بھی کردیا ہے، سینئر صحافی مجیب الرحمان شامی نے ایک نجی ٹی وی چینل سے گفتگو کرتے ہوئے انکشاف کیا کہ وزیراعظم کوعدالتی حکم نامے میں موجودہ سیٹ سے ڈی سیٹ کیا گیا ہے تاحیات نااہل نہیں کیا گیا، نواز شریف کے پاس گو کہ موجود سیٹ نہیں رہی،

ADVERTISEMENT
Ad
مگر وہ افتخار احمد چیمہ کی طرح دوبارہ الیکشن لڑ سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نواز شریف آئندہ الیکشن 2018 میں حصہ لے سکتے ہیں، انہیں صرف ایف زیڈ ای کمپنی کی ملازمت ظاہر نہ کرنے کے الزام میں عہدے سے ہٹایا گیا ہے، نواز شریف نے کمپنی کی جانب سے کوئی تنخواہ وصول نہیں کی، انہوں نے مزید کہا کہ یہ بات واضح ہے کہ انہیں کرپشن کے الزام پر عہدے سے نہیں ہٹایا گیا، مسلم لیگ (ن) کے ٹکٹ پر منتخب ہونے والے جسٹس (ر) افتخار چیمہ کا کیس بھی بالکل ایسا ہی تھا، جنہوں نے اپنے کاغذات نامزدگی میں اپنی اہلیہ کا اکاؤنٹ ظاہر نہیں کیا، افتخار چیمہ نے بھی اگلا الیکشن لڑا۔ مجیب الرحمان شامی نے کہا کہ سپریم کورٹ نے پاناما کیس کے فیصلے میں نواز شریف کی نااہلی کی مدت کا کہیں تذکرہ نہیں ہے لہٰذا میاں نواز شریف بھی افتخار چیمہ کی طرح اگلا الیکشن لڑ سکتے ہیں۔

اپنا تبصرہ بھیجیں