اسلام آباد (آئی این پی) سپریم کورٹ کے جسٹس شیخ عظمت سعید نے اسحاق ڈار کے وکیل سے مکالمے میں کہا کہ کوئی نئی بات ہے تو وہ کریںجبکہ جسٹس اعجاز افضل خان نے کہا کہ ہل میٹل کیس کا اہم ترین حصہ ہے اسحاق ڈار نے کچھ نہیں کیا تو آپ پریشان کیوں ہیں؟ نعیم بخاری کہتے ہیں کیس وکیل نہیں موکل ہارتا ہے۔بدھ کو پانامہ عملدرآمد کیس کی سماعت کے دوران سینیٹر اسحاق ڈار کے وکیل طارق حسن نے کہا کہ رپورٹ کی ایک خاصیت ہزاروںصفحات کا بھی ہونا ہے، تمام صفحات کو جے آئی ٹی نے بطور

ADVERTISEMENT
Ad
شواہد پیش کرنے کی کوشش کی، سماعت کے دوران جسٹس اعجاز افضل خان نے ریمارکس دیئے کہ آپ کے پاس تیاری کیلئے بہت وقت تھا آپ وہی معلومات دینا چاہتے ہیں جتنی ماضی میں دی تھیں جبکہ جسٹس شیخ عظمت سعید نے اسحاق ڈار کے وکیل سے مکالمے میں کہا کہ کوئی نئی بات ہے تو وہ کریں۔سماعت کے دوران طارق حسن نے کہا کہ جے آئی ٹی نے اسحاق ڈار کو مجرم کیوں تصور کیا؟

اپنا تبصرہ بھیجیں