اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان سے محبت نہ ہوتی تو ایٹمی دھماکوں کے عوض کلنٹن سے 5ارب ڈالر لےلیتا، ملک میں مینا بازار لگا ہوا ہے، کس منصوبے میں کرپشن ہوئی جس کا احتساب کیاجا رہا ہے،4سال سے حکومت میں ہیں مگر 44سال کا حساب مانگا جا رہا ہے، ان خیالات کا اظہار وزیراعظم نواز شریف نے سیالکوٹ میں ایوان صنعت و تجارت کی تقریب سےخطاب کرتے ہوئے کیا ہے۔ وزیراعظم نواز شریف کا کہنا تھا کہ پاکستان سے محبت نہ ہوتی تو ایٹمی دھماکوں کے عوض کلنٹن سے 5ارب ڈالر لےلیتاملک میں مینا بازار لگا ہوا ہے، بتایا جائے کہ

ADVERTISEMENT

کس منصوبے میں کرپشن ہوئی ہے جس کا احتساب کیا جا رہا ہے۔ ذوالفقار علی بھٹو نے ہمارے کاروبار کونیشنلائز کیا ، ن لیگ 4سال سے حکومت میں ہے اور ہم سے 44سال کا حساب مانگا جا رہا ہے،ہمارے خلاف پہلے دھرنے اور اب یہ تماشہ لگا ہوا ہے ۔ دھرنوں کے باعث چینی صدر کا دورہ پاکستان 6ماہ تاخیر کا شکار ہوا اور اگر دورہ وقت پر ہو جاتا تو آج سی پیک پر کام زیادہ آگے کی جانب بڑھ چکا ہوتا جتنا کہ آج ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہر گزرتے وقت کے ساتھ ملک میں بجلی کے کارخانے لگتے جا رہے ہیں اور ان میں سے بیشتر نے پیداوار کا بھی آغاز کر دیا ہے۔ کرپشن کا حساب ان سے لیا جانا چاہئے جنہوں نے کرپشن کی ، ہمیں تو ذوالفقار علی بھٹو کے دور میں لوٹا گیا اور ہمارے اثاثے قومیا لئے گئے۔نواز شریف کا کہنا تھا کہ منفی سیاست کے باعث سٹاک ایکچینج 10ہزار پوئنٹس نیچے گری۔ استعفیٰ مانگنے والوں کو عوام نےبار بار مسترد کیا ہے۔ڈگڈگی بجانے والے ڈگڈی بجاتے رہیں گے اور ہم اپنا کام کرتے رہیں گے۔اس موقع پر وزیراعظم میاں محمد نواز شریف نے پانامہ معاملے پر بات کرتے ہوئے کہا کہ اللہ کے فضل سے ہم اس معاملے میں بھی سرخروں ہونگے، انہوں نے سیالکوٹ میں اپنی مدد آپ کے تحت ائیرپورٹ بنانے پر سیالکوٹ کی بزنس کمیونٹی کو زبردست خراج تحسین بھی پیش کیا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں