خانیوال(مانیٹرنگ ڈیسک )پاکستان کے شہر خانیوال کے نواحی علاقے جہانیاں میں چور مسجد سے یوپی ایس کی بیٹریاں اور چندے کا ڈبہ چور ی کر کے فرار ہو گیالیکن ساتھ ہی ایک خط لوگوں کے نام لکھ کرچھوڑگیاْ تفصیلات کے مطابق خانیوال کی جامع مسجد صدیق المدینہ کے امام قاری سعید نے کہاہے کہ جب تمام نمازی لیلتہ القدار کی رات عبادت میں مصروف تھے تو اس وقت چور مسجد سے یوپی ایس کی بیٹریاں اور گلہ اٹھا کر لے گیاجس میں ممکنہ طور پر 50ہزار سے زائد رقم موجود تھی جبکہ چور نے جاتے ہوئے ایک خط بھی چھوڑا
ADVERTISEMENT
Ad
ہے جس میں اس نے کہاہے کہ’یہ معاملہ میرے اور خدا کے درمیان ہے اس لیے کوئی بھی مجھے ڈھونڈنے کی کوشش نہ کرے ،مجھے اس کی سب سے زیادہ ضرورت تھی اس لیے اللہ کے گھر سے چووری کی ۔‘خط میں چور نے یہ بھی کہاہے کہ ’ایک بار وہ اس مسجد میں آ یا تھا اور اس نے امام صاحب کو مدد کیلئے کہا لیکن بعد میں امام صاحب نے مدد کرنے سے انکار کرتے ہوئے مسجد سے باہر نکال دیا تھا،جب لوگوں نے میری مدد کرنے سے انکار کر دیا تو میں مسجد میں چوری کرنے پر مجبور ہو گیا ،میں نے کسی کے گھر سے کچھ نہیں چرایا ہے ،میں یہاں سے کچھ ہی چیزیں لے جار ہاہوں تاہم اس لیے یہ میرے اور اللہ کے درمیان معاملہ ہے اور کسی کو اس معاملے میں ٹانگ اڑانے کی ضرورت نہیں ہے ‘۔یہ تمام صو رتحال جان کراہلیان علاقہ نے امام مسجد کو چور کر معاف کرنے کی درخواست کی ہے اور اہل علاقہ کاکہناہے کہ وہ شائد بہت ہی مجبور تھا جس کی وجہ سے اس نے یہ قدم اٹھایا ہے اورفوری طور پرنئی بیٹڑیاں لگوادی گئی ہیں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں