لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے کہا ہے کہ شوکت خانم کی تین ملین کی سرمایہ کاری تھائی لینڈ میں کی تھی جو واپس آ گئی تھی، انہوں نے کہاہےجے آئی ٹی کو متنازع بنایا جا رہا ہے، ہم نے پہلے ہی کہا تھا کہ نواز شریف وزیر اعظم رہے تو اداروں کو کام نہیں کرنے دیں گے، جے آئی ٹی کو متنازع بنانے کی کوشش کی گئی تو عید کے بعد بڑی تحریک چلائیں گے۔عمران خان نے کہاکہ انہیں غیرملکی حکومتوں نے پیسوں کی آفر کی تھی۔ اس موقع پر عمران خان نے مسلم لیگ (ن) پر میانوالی میں تحریک انصاف کے کونسلر کو 90 لاکھ روپے رشوت دینے کا بھی الزام لگایا،پی ٹی آئی کے اس ٹائیگرسہیل خان نے نوے لاکھ لے کر نمل یونیورسٹی کو دینے کا اعلان کیا ہے۔عمران خان نے مزید کہا ، 2013ء میں الیکشن کی تیاری نہیں تھی لیکن اب تیار ہیں، لاہور اور میانوالی سے الیکشن لڑوں گا اس کے علاوہ کہاں کہاں سے لڑوں گا، اس کا فیصلہ نہیں کیا۔چیئرمین پی ٹی آئی نے مزید کہا کہ آرمی چیف نے شفاف الیکشن کرانے کی یقین دہانی کرائی ہے، پولنگ سٹیشنز کے اندر اور باہر ایک ایک فوجی اہلکار ہو گا، 2013ء کے الیکشن میں جاوید ہاشمی پر الزام تھا کہ انہوں نے پیسے لیکر ٹکٹ جاری کئے تھے ۔جبکہ وزیر قانون پنجاب رانا ثناء اللہ نے کہا ہے کہ جاوید ہاشمی کا بیان موجودہ صورتحال میں لمحہ فکریہ ہے۔ نجی ٹی وی سے گفتگوکرتے ہوئے راناثنااللہ خا ن نے کہاکہ مخدوم جاویدہاشمی نے جو بات کی اس پر توجہ نہ دی تو ملک کا آئینی مستقبل خدشات سے دوچار ہو سکتا ہے۔ سپریم کورٹ کو جاوید ہاشمی سمیت دیگر کو بلاکر فیکٹ فائینڈنگ کرنی چاہئے۔ حقائق سے آگاہی ملنا قوم کا حق ہے

اپنا تبصرہ بھیجیں