نئی دہلی(آئی این پی)بیس جون کا دن شاید انڈین کرکٹ کی تاریخ کا افسوسناک دن تصور کیا جائے، جب ماضی کے لیجنڈ کھلاڑی اور ٹیم کے ہیڈ کوچ انیل کمبلے نے کپتان ویرات کوہلی کی وجہ سے اپنا استعفی دیدیا تھا۔ انڈین میڈیا اور سابق کھلاڑی اس صورتحال پر سخت تشویش کا اظہار کر رہے ہیں۔ ان شخصیات میں سابق کھلاڑی سنیل گواسکر بھی ہیں، جنہوں نے ویرات کوہلی کے ساتھ جھگڑے کے بعد انیل کمبلے کے استعفے پر سخت ناراضگی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ انھیں اس بات سے بہت دکھ پہنچا ہے۔انڈین میڈیا کے مطابق سنیل گواسکر نے سخت بیان دیتے ہوئے کہا کہمجھے سمجھ نہیں آ رہی کہ ہماری ٹیم کے نوجوان آخر کیا چاہ رہے ہیں؟ کیا انھیں ایسا نرم دل کوچ چاہیے جو ان سے کہے کہ جا ؤشاپنگ کرو، موج مستی مارو، آج تو نیٹ پریکٹس کی بالکل ضرورت نہیں ہے۔ گواسکر نے کہا کہ انیل کمبلے کی کوچنگ میں انڈین ٹیم نے جو کامیابیاں حاصل کیں وہ کسی سے ڈھکی چھپی نہیں ہیں۔ مجھے خدشہ ہے کہ جو انیل کمبلے کے ساتھ ہوا، اس سے نئے آنے والے کوچ پر کیا تاثر جائے گا۔ وہ تو یہی سمجھے گا کہ اگر اسے اپنے عہدے پر برقرار رہنا ہے تو کھلاڑیوں کی ہی بات ماننا پڑے گی، بصورت دیگر اسے اپنے عہدے سے ہاتھ دھونا پڑیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں