ریاض(آئی این پی)سعودی کابینہ نے باور کرایا ہے کہ قطر کے ساتھ سفارتی تعلقات منقطع کرنے کا فیصلہ مملکت کی جانب سے خود مختاری کے ان حقوق کا استعمال کرتے ہوئے کیا گیا جن کی ضمانت بین الاقوامی قانونی نے دی ہے، اس کا مقصد مملکت کی قومی سلامتی کو دہشت گردی اور شدت پسندی کے خطرات سے بچانا ہے۔غیر ملکی میڈیا کے مطابق سعودی کابینہ نے اس موقف کو پھر سے دہرایا کہ مملکتِ سعودی عرب دوحہ میں حکام کی جانب سے دشمنانہ اقدامات سے قطع نظر ہر حال میں قطر کے عوام کی معاون رہے گی اور ان

امن و استحکام کو سپورٹ کرتی رہے گی۔سعودی کابینہ نے واضح کیا کہ متعدد برادر ممالک کی جانب سے قطر کے ساتھ سفارتی تعلقات منقطع کرنے کے فیصلے اس بات کا اظہار کر دیا کہ یہ تمام ممالک عرب دنیا کی وحدت کو برقرار رکھنے کے خواہش مند ہیں اور قطر کے ان مسلسل اقدامات کے خلاف موقف رکھتے ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں