واشنگٹن (این این آئی)امریکی تجزیہ کاروں نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ جوہری تجربے کے لیے شمالی کوریا کی تیاریاں آخری مراحل میں داخل ہوچکی ہیں۔فرانسیسی میڈیا کے مطابق سیٹیلائٹ کے ذریعے لی گئی تصاویر سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ شمالی کوریا کے جوہری تجربے کی تیاریاں اختتامی مراحل میں ہیں۔25مارچ کو لی گئی تصاویر میں شمالی کوریا کے پنگ گئری جوہری تجرباتی مقام پر چار گاڑیوں کو کھڑا دیکھا جاسکتا ہے ٗ

ان گاڑیوں سے منسلک تاروں کو زمین پر بکھرے بھی دیکھا جاسکتا ہے۔جان ہاپکنز یونیورسٹی میں امریکی کورین انسٹیٹیوٹ کے منصوبہ 38 نارتھ کی جانب سے سامنے آنے والے بیان کے مطابق یہ ساز و سامان متوقع طور پر جوہری تجربے کے آغاز ٗدھماکے کے بعد معلومات کو اکھٹا کرنے میں استعمال ہوسکتا ہے ٗگذشتہ ہفتے امریکی فوج نے شمالی کوریا کی ہرمٹ ریاست میں نیوکلیئر سائٹس پر شمالی کوریا کی سرگرمیوں پر بھی کچھ ایسے ہی اندازے کا اظہار کیا تھا۔خیال رہے کہ شمالی کوریا کافی عرصے سے امریکا تک مار کرنے والے جوہری ہتھیار لے جانے کی صلاحیت رکھنے والے میزائل کی تیاری کی کوششوں میں ہے ٗدھماکے کے بعد معلومات کو اکھٹا کرنے میں استعمال ہوسکتا ہے ٗگذشتہ ہفتے امریکی فوج نے شمالی کوریا کی ہرمٹ ریاست میں نیوکلیئر سائٹس پر شمالی کوریا کی سرگرمیوں پر بھی کچھ ایسے ہی اندازے کا اظہار کیا تھا۔خیال رہے کہ شمالی کوریا کافی عرصے سے امریکا تک مار کرنے والے جوہری ہتھیار لے جانے کی صلاحیت رکھنے والے میزائل کی تیاری کی کوششوں میں ہے اور گذشتہ سال سے اب تک 5 جوہری تجربات کرچکا ہے۔شمالی کوریا کی جانب سے ایک اور دھماکا نئے امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے لیے کسی تازہ چیلنج سے کم نہ ہوگا جو پہلے ہی یہ ٹوئیٹ کرچکے ہیں کہ شمالی کوریا کے بین البراعظم بیلسٹک میزائل رکھنے کی خواہش کو پورا نہیں ہونے دیا جائیگا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں