لاہور(آئی این پی) جسٹس (ر)ملک عبدالقیوم نے کہا ہے کہ کرکٹ میں فکسنگ سکینڈل کی تحقیقات کے دوران وسیم اکرم کو شک کا فائدہ دیا جبکہ انضمام کے خلاف فکسنگ کے ثبوت نہیں ملے، سلیم ملک اور عطا الرحمان کے خلاف پکے ثبوت تھے اس لیے انہیں ذمہ دار قرار دیا۔اپنے ایک انٹر ویو جسٹس (ر)ملک عبدالقیوم نے کہا کہ جسٹس (ر) عبدالقیوم نے کہا کہ سلیم ملک اور عطا الرحمان کے خلاف پکے ثبوت تھے اس لیے انہیں

فکسنگ کا ذمہ دار قرار دیا ‘ عطا الرحمان کی بات پر بھروسہ نہیں تھا اس نے کمیشن کے سامنے جھوٹ بولے اور بار بار بیانات بدلتا رہا۔انہوں نے کہا کہ انضمام الحق بڑا کھلاڑی تھا لیکن اس کے خلاف فکسنگ کا کوئی ثبوت نہیں ملا، وسیم اکرم کا بڑا نام تھا اس لیے ہلکا ہاتھ رکھا ، اس کے خلاف کارروائی کیلئے پکے ثبوت درکار تھے لیکن ثبوت نہیں ملے جس کی وجہ سے اسے شک کا فائدہ دے کر چھوڑنا پڑا‘ آفیشلز کے بغیر فکسنگ ہو ہی نہیں سکتی،

اپنا تبصرہ بھیجیں