تازہ ترین جائزے میں ایک بات سامنے آئی ہے کہ مسلمانوں کی مقدس کتاب قرآن حکیم کی تلاوت کرنے اور سننے سے ذہنی تنائو کم ہو جاتا ہے ۔ ایک امریکن یونیورسٹی نے قرآن حکیم کی تلاوت کے موضوع پر ماہرین کی مدد سے جائزہ تیار کروایا ۔ ذہنی امراض کے ہسپتال کے ڈائریکٹر اور کنسلٹنٹ ڈاکٹر رجب عبدالحکیم بریسالی جو سعودی نیشنل گارڈ ہسپتال میں میڈیکل کمپنی کے رکن بھی ہیں نے بتایا کہ عربی زبان نہ

جاننے والے ایک گروپ کو آڈیو کیسٹ کے ذریعے قرآن حکیم کی آیات سنائی گئیں اس موقع پر ان افراد کے ذہن پر پڑنے والے اثرات کا جائزہ مشینوں کے ذریعے ریکارڈ کیا گیا۔ نتائج سب کیلئے حیران کن ثابت ہوئے۔ قرآن حکیم ایسے افراد کو سنایا گیا تھا جو نہ تو عربی سے واقف تھے اور نہ انہوں نے کبھی قرآن حکیم سنا تھا وہ مذہباََ غیر مسلم تھے۔ قرآن حکیم کی تلاوت سننے سے واضح ہوا کہ اس سے قبل وہ ذہنی تنائو کا شکار اور ڈپریشن میں مبتلا تھے اور ان کی دماغی حالت بھی ٹھیک نہ تھی۔ تاہم قرآن حکیم کی تلاوت سننے کے بعد ان کا ذہنی تنائو ختم ہو گیا اور ان کے دماغ پر تازگی چھا گئی۔ ڈاکٹر بریسالی نے بتایا کہ ہم اس سے یہ نتیجہ اخذ کر سکتے ہیں کہ جو لوگ قرآن پاک سنتے ہیں وہ ذہنی تنائو اور ڈپریشن سے محفوظ رہ سکتے ہیں۔
’’اور بے شک دلوں کا سکون اللہ کے ذکر میں ہے(القرآن)

اپنا تبصرہ بھیجیں