لاہور( آن لائن ) گوادر کے طلبا نے وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف کے سامنے سوالات کے انبار لگا دیے ، گوادر کے طلبہ نے وزیر اعلی پنجاب سے سوال کرتے ہوئے کہا کہ پاک چین اقتصادی راہداری منصوبہ گوادر میں بن رہا ہے اور ترقی لاہور میں ہو رہی ہے،وزیر اعلی نے طلبہ کو جواب دیتے ہوئے کہا کہ میٹرو بس سی پیک سے پہلے لاہور میں چل رہی تھی جبکہ سڑکوں کا جال اور دانش سکول بھی سی پیک منصوبے سے پہلے بنائے گئے ہیں۔ سی پیک سے پہلے ہی لاہور میں ترقی ہو رہی تھی ، لاہور میں میٹرو بس سی پیک سے پہلے چل رہی ہے۔ تفصیلات کے مطابق بدھ کے لاہور میں وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے گوادر سے تعلق رکھنے والے طلبا کے اعزاز میں دیئے گئے ظہرانے میں شرکت کی تو طلبا سی پیک سے بلوچستان کو محروم رکھنے پر پھٹ پڑے اور وزیراعلیٰ پنجاب سے کہا کہ سی پیک کا سن سن کر تھک چکے ہیں، منصوبہ گوادر میں بن رہا ہے اور ترقی لاہور میں ہو رہی ہے۔طلبا نے کہا کہ ہمارے پاس پینے کے لئے نہ تو صاف پانی میسر ہے اور نہ بجلی ملتی ہے، سیاستدان گوادر کا دورہ کریں تو لوڈشیڈنگ ختم ہو جاتی ہے اور انکی واپسی کے بعد لوڈشیڈنگ دوبارہ سے شروع ہو جاتی ہے۔’’کپڑے استری کرنے کیلئے بھی بجلی نہیں ہوتی‘‘۔۔ طلبا نے کہا کہ چینی زبان سیکھنے کے لئے طالب علموں کو بھی لاہور سے بھیجا جاتا ہے جس پر وزیراعلیٰ نے یقین دہانی کرائی کہ آئندہ 10طلبا گوادر سے چین کا دورہ کریں گے۔<

اپنا تبصرہ بھیجیں