پشاور(این این آئی)قومی اسمبلی میں تحریک انصاف اور ن لیگ کے مابین تلخ کلامی اورشورشرابا خیبرپختونخوااسمبلی تک پہنچ گئی ۔ صوبائی اسمبلی میں ن لیگ کے پارلیمانی لیڈرنے سپیکر کو باربار اسدقیصرپکارناشروع کردیاجسکی وجہ سے خیبرپختونخوااسمبلی مچھلی منڈی میں تبدیل ہوگئی اور تحریک انصاف کے اراکین بھی ن لیگ کیخلاف آستینیں چڑھاتے رہے،صوبائی اسمبلی کے اجلاس میں آرمی پبلک سکول کے شہداء کو خراج تحسین پیش کرنے کیلئے جب اراکین اسمبلی اپنی تقاریرکررہے تھے تو اس دوران سپیکراسدقیصرنے ن لیگ کے پارلیمانی لیڈر سرداراورنگزیب نلوٹھاکوبولنے کا موقع دیا اپنی تقریرکے آغازپرہی اورنگزیب نلوٹھا جناب اسدقیصر ،جناب اسدقیصرپکارتے رہے،اس دوران تحریک انصاف کے اراکین بھی اٹھ گئے اور ن لیگ کیخلاف نعرہ بازی کرنے لگے ،پی ٹی آئی کے محمودجان ایوان میں چیختے رہے کہ کچھ شرم ہوتی ہے کچھ حیاء ہوتی ہے اس دوران ایوان میں کان پڑی آوازسنائی نہیں دے رہی تھی ،ن لیگ کے پارلیمانی لیڈرنے سپیکراسدقیصرکومخاطب کرتے ہوئے کہاکہ وفاکروگے تو وفاکرینگے جفاکروگے توجفاکرینگے۔

وہاں جوتم کروگے یہاں وہ ہم کرینگے،اس دوران مفتی جانان نے مداخلت کی اور ن لیگ کے پارلیمانی لیڈر کوکہاکہ اسلام آبادکی تلخ کلامی کویہاں نہیں آنے دیاجائے اس ایوان کا ایک تقدس اوراپنی روایات ہیں اس کا خیال رکھاجائے اس دوران سینئروزیرعنایت اللہ نے کہاکہ آج آرمی پبلک سکول کے موقع پر شہیدوں کو خراج عقیدت پیش کیاجاناچاہیے نہ کہ اسلام آبادکے واقعات کو سامنے لایاجائے،جس کے بعد ایوان میں معمول کی کارروائی شروع ہوئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں